عالمی مرکز مهدویت – icm313.com

سلسلہ بحث مہدویت(نویں قسط)_ موضوع:انتظار امام عصر عج کی جزا اور ثواب – مصنف: استاد محترم مهدویت حجت الإسلام و المسلمین علی اصغر سیفی صاحب.

مہدی مضامین و مقالات

سلسلہ بحث مہدویت(نویں قسط)_ موضوع:انتظار امام عصر عج کی جزا اور ثواب – مصنف: استاد محترم مهدویت حجت الإسلام و المسلمین علی اصغر سیفی صاحب.

انتظار کرنے والوں کا ثواب

خوش نصیب ہیں وہ اشخاص جو نیکیوں کے انتظار میں نظریں بچھائے ہوئے ہیں، واقعاً کتنا عظیم ثواب ہے ان لوگوں کے لئے جو امام مہدی عليہ السلام کی عالمی حکومت کا انتظار کرتے ہیں اور کس قدر عظیم رتبہ ہے ان لوگوں کا جو قائم آل محمد عليہ السلام کے حقیقی منتظر ہیں!۔
یہاں یہ مناسب معلوم ہوتاہے کہ اس گفتگو کے آخر میں جام انتظار نوش کرنے والوں کی بے مثال فضیلت اور مرتبہ کو بیان کریں اور معصومین علیه السلام کے بیانات کے چند نمونے پیش کریں:
حضرت امام صادق عليہ السلام فرماتے ہیں:
خوش نصیب ہیں ہم اہل بیت کے قائم آل محمد کے وہ شیعہ جو غیبت کے زمانہ میں ان کے ظہور کا انتظار کریں اور ان کے ظہور کے زمانہ میں ان کی اطاعت اور پیروی کریں.
یہی لوگ خداوندعالم کے محبوب ہیں جنہیں کوئی غم و اندوہ نہ ہوگا”۔
(کمال الدین،ج٢،باب٣٣،ح٥٤،ص٣٩.)
واقعاً اس سے بڑھ کر اور کیا فضیلت ہو سکتی ہے کہ انسان کے سینہ پر خداوندعالم کی دوستی کاتمغہ ہو،اور کیوں کسی غم و اندوہ میں مبتلا ہووہ شخص جس کی زندگی اور موت دونوں کی قیمت بہت بلندو بالا ہو۔
حضرت امام سجاد عليہ السلام فرماتے ہیں:
جو شخص ہمارے قائم عليہ السلام کی غیبت کے زمانہ میں ہماری ولایت پر قائم رہے گا، خداوندعالم اس کو شہدائے بدر و احد کے ہزار شہیدوں کا ثواب عطا کرے گا”۔
(کمال الدین،ج٢،باب٣١،ح٦،ص٥٩٢.)
جی ہاں! غیبت کے زمانہ میں جو لوگ اپنے امام زمانہ عليہ السلام کی ولایت اور اپنے امام سے کئے ہوئے عہد و پیمان پر باقی رہیں توان کی مثال ان مجاہدین کی ہے جنھوں نے پیغمبر اکرم صلي اللہ عليہ وآلہ وسلم کے ساتھ مل کر دشمنان خدا سے جنگ کی ہو اور اس کارزار میں اپنے خون میں نہائے ہوں!
وہ منتظرین جو فرزند رسول، امام زمانہ عليہ السلام کے انتظار میں جان ہتھیلی پر رکھے ہوئے ہیں وہ ابھی سے جنگ کے میدان میں اپنے امام کے ساتھ موجود ہیں۔
حضرت امام صادق عليہ السلام فرماتے ہیں:
اگر تم (شیعوں میں) سے کوئی شخص (امام مہدی عليہ السلام ) کے ظہور کے انتظار میں مرجائے تو وہ شخص گویا اپنے امام عليہ السلام کے خیمہ میں رہا ہے!
پھر امام عليہ السلام نے تھوڑے وقفہ کے بعد فرمایا:بلکہ اس شخص کی طرح ہے جس نے امام کے ساتھ مل کر جنگ میں تلوار چلائی ہو!
پھر فرمایا: نہیں؛ خدا کی قسم وہ اس شخص کی طرح ہے جو رسول خدا صلي اللہ عليہ وآلہ وسلم کی رکاب میں شہادت کے درجہ پر فائز ہواہو”۔
(بحار الانوار،ج٥٢،ص١٢٦.)

جو لوگ امام زمانہ عليہ السلام کا انتظار کرتے ہیں یہ وہی لوگ ہیں جن کو پیغمبر اکرم صلي اللہ عليہ وآلہ وسلم نے صدیوں پہلے اپنا بھائی اور دوست قرار دیا ہے اور ان سے اپنی قلبی محبت اور دوستی کا اعلان کیا ہے۔
حضرت امام محمد باقر عليہ السلام نے فرمایا:
ایک روز پیغمبر اکرم صلي اللہ عليہ وآلہ وسلم نے اپنے صحابہ کے ایک گروہ کی محفل میں فرمایا:
پالنے والے! مجھے میرے بھائی کو دکھلادے!
اوریہ جملہ دو بارکہا. آنحضرت صلي اللہ عليہ وآلہ وسلم کے اصحاب نے کہا:
یا رسول اللہ! کیا ہم آپ کے بھائی نہیں ہیں؟!
آنحضرت صلي اللہ عليہ وآلہ وسلم نے فرمایا:
تم لوگ میرے صحابہ ہو لیکن میرے بھائی وہ ہیں جو آخری زمانے میں مجھ پر ایمان لائیں گے جبکہ انہوں نے مجھے نہیں دیکھا ہوگا!
خداوندعالم نے ان کا نام مع ولدیت مجھے بتایا ہے… ان میں سے ہر ایک کا اپنے دین پر ثابت قدم رہنا اندھیری رات میں ”گون” نامی درخت سے کانٹا توڑنے اور دہکتی ہوئی آگ کو ہاتھ میں لینے سے کہیں زیادہ سخت ہے۔
وہ لوگ ہدایت کی مشعل ہیں جن کو خداوندعالم خطرناک فتنہ و فساد سے نجات عطاکرے گا” . (بحارالانوار،ج٥٢،ص١٢٣.)
نیز پیغمبر اکرم صلي اللہ عليہ وآلہ وسلم نے فرمایا:
خوش نصیب ہے وہ شخص جو ہم اہل بیت کے قائم کے زمانے کو پائے اس حال میں کہ وہ ان کے قیام سے پہلے ان کی اقتداء اور پیروی کرتا ہو۔
وہ شخص جناب قائم عليہ السلام کے دوستوں کا دوست اور ان کے دشمنوں کا دشمن ہو۔ نیز ان سے پہلے کے آئمہ سے بھی محبت رکھتاہو .
ایسے لوگ میرے ساتھی اور میری محبت و مودت کے مالک ہیں اور میرے نزدیک میری امت کے سب سے محبوب و معزز افراد ہیں”۔
(کمال الدین،ج١،باب٢٥،ح٢،ص٥٣٥.)
لہٰذا جو افراد پیغمبر اکرم صلي اللہ عليہ وآلہ وسلم کے نزدیک اتنا عظیم مرتبہ رکھتے ہیں ان لوگوں کو آنحضرت صلي اللہ عليہ وآلہ وسلم کے دوست کے عنوان سے خطاب کیا جائے گا! اور وہ بھی ایسی آوازمیں جو عشق و محبت سے بھری ہوگی اور خداوندعالم سے نہایت قربت کی عکاسی کرتی ہوگی۔
حضرت امام محمد باقر عليہ السلام نے فرمایا:
ایک زمانہ وہ آئے گا کہ مومنین کا امام غائب ہوگا، پس خوش نصیب ہے وہ شخص جو اس زمانہ میں ہماری ولایت پر ثابت قدم رہے بے شک ان کی کم سے کم جزا یہ ہوگی کہ خداوندعالم ان سے خطاب فرمائے گا:
اے میرے بندو! تم میرے راز (اور امام غائب) پر ایمان لائے ہو اور تم نے اس کی تصدیق کی ، پس تمہیں میری طرف سے بہترین جزا کی بشارت ہو، تم واقعاًمیرے بندے ہو۔
میں تمھارے اعمال کو قبول کرتا ہوں اور تمھاری خطاؤں سے درگزر کرتا ہوں اور تمھاری (برکت کی) وجہ سے اپنے بندوں پر بارش نازل کرتا ہوں اور بلاؤں کو دور کرتا ہوں اوراگر تم (لوگوں کے درمیان ) نہ ہوتے تو پھر میں(گناہگار لوگوں پر) ضرور اپناعذاب نازل کرتا” .
(کمال الدین،ج١،باب٢٣،ح١٥،ص٦٠٢.)
لیکن انتظار کرنے والوں کو کس چیز کے ذریعہ آرام اور سکون ملتا ہے اور کیا چیز ان کے انتظار کو ختم کرتی ہے؟ کس چیز سے ان کی آنکھوں کو ٹھنڈک ملتی ہے اور ان کے بے قرار دلوں کو چین و سکون کب ملتا ہے؟
کیا جن لوگوں نے عمر بھر انتظار کے راستہ پرنظریں جمائے رکھیں اور تمام تر مشکلات کے باوجود اسی راستہ پر گامزن رہے تاکہ مہدی منتظر عليہ السلام کے سر سبز چمن میں قدم رکھیں کیا وہ لوگ اپنے محبوب امام کی ہم نشینی سے کم کسی اور چیزپر راضی ہوں گے؟
آیا اس ہم نشینی سے بہترین اورکوئی انعام ہوسکتا ہے اور اس سے بہتر کوئی اور موقع ہوسکتا ہے!
حضرت امام موسیٰ کاظم عليہ السلام نے فرمایا:
خوش نصیب ہیں ہمار ے وہ شیعہ جو ہمارے قائم کی غیبت کے زمانہ میں ہماری دوستی کی رسّی کو مضبوطی سے تھامے رکھیں اور ہماری دوستی اور ہمارے دشمنوں سے بیزاری پر ڈٹے رہیں۔
وہ ہم سے ہیں اور ہم ان سے ہیں ،وہ ہماری امامت و رہبری پر راضی ہوئے (اور ہماری امامت کو قبول کیا) اور ہم بھی ان کے شیعہ ہونے سے راضی اور خوشنودہوئے ہیں .
خوش نصیب ہیں وہ!! خدا کی قسم یہ افراد روز قیامت ہمارے ساتھ اور ہمارے مرتبہ میں ہوں گے”۔
(کمال الدین،ج٢،باب٣٤،ح٥،ص٤٣.)

(جاری ہے……)
                                            طالب دعا :علی اصغر سیفی​

Leave your thought here

ٹیگز

icm313.com www.icm313.com آڈیوز آیات مهدویت آیندہ کے حوالے سے کیا پروگرام اخلاق منتظرین استاد حجت الاسلام والمسلمین علی اصغر سیفی استاد محترم حجت الاسلام والمسلمین علی اصغر سیفی استاد مہدویت علی اصغر سیفی امام(عج) کی معرفت امام زمانه امام زمانہ امام زمانہ عليہ السلام کے انتظار کی خصوصیات امام مہدی (عج) امام مہدی عج نہج البلاغہ کی رو سے انتظار حقیقی انتظار کے اثرات آغا علی اصغر سیفی آیۃ اللہ نجم الدین طبسی تحریر: استاد علی اصغر سیفی (محقق مہدویت) جلد ۲ جوان حجت الاسلام والمسلمین علی اصغر سیفی حضرت مہدی علیہ السلام روح و روان انسان سوالات و جوابات سوالات وجوابات شرائط اور علامتيں(تعريف اور فرق) ظہور ظہور تک فاصلہ اور حجاب کا باعث قیام حضرت مہدی(عج) منتظرین کے فرائض مهدویت آڈیوز مهدوی پروگرامز مھدویت مھدویت آڈیوز مہدویت ویڈیوز ناصرین اور حقیقی منتظرین نهج البلاغہ نہج البلاغہ وہ تیاری ویڈیوز کتاب کیا پانچ سال کا بچہ امام بن سکتا ہے؟